ہمارے نان سیکسی قسم کے انسانیت پر مظالم

ہیروشیما پر بم گرنا کوئی انسانیت پر ہوا اکیلا ظلم نہیں تھا، یہ جو ہم ہر روز دوسروں کا حق مارتے ہیں یہ بھی انسانیت پر ظلم ہے, چونکہ ہمارے کرتوت ایٹم بم جتنے سیکسی نہیں ہیں لہذا ان پر کیا سوچنا کیا سینہ کوبی کرنا۔ صبح سے جو 1945 میں گرے ایٹم بم اور ہیروشیما کی جو صف ہم نے بچھا رکھی ہے اس سے فرصت ملے تو سوچئے گا کہ کیا ہم نے اپنے حصے کی زمہ داری برائے انسانیت ادا کی یا سب ٹوپی ڈرامہ اور لفاظی ہی ہے۔
Advertisements

Leave a comment

Filed under سوچ بچار

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s