کشکول اور اسکا رساؤ

کشکول – تصویر بشکریہ
آج برادر عاصم اکرام کی تحریر پڑھنے کا اتفاق ہوا، مجھے پڑھتے وقت بار بار 2011 کی فروری کی ایک سرد صبح یاد آ رہی تھی جب مصنف لندن سے آکسفورڈ کی ایک بس میں سوار تھا اسی بس میں کچھ اور پاکستانی بھی شامل تھے جو ایک کانفرنس میں شرکت کے لئے لندن سے آکسفورڈ جا رہے تھے۔

اپنا جانا بھی اسی کانفرنس میں تھا تو ان سے دعا سلام کی اور ان کے ساتھ زیر بحث موضوع کو جاری کیا کرتے کرتے بات غیرت، غلامی، اور مقروض ملک کی جانب جا نکلی۔ تب بحث کے دوران ایبٹ آباد سے آئے ایک بھاری بھرکم طالب علم نے کہا کہ

 میاں اگر صاحب لوگ پیسے دینے بند کر دیں تو چپل تک نہ رہے گی پیروں میں۔۔۔ 

اس وقت نہ جانے کس وجہ سے چپ رہا اور جواب نہ دیا لیکن آج تک سوچ رہا ہوں چپل تو پہلے بھی نہیں ہے پیروں میں۔ 
کئی بھوکے ننگے جموروں کی حالت دکھا کر ان کے نام پر پیسہ لیا جاتا ہے لیکن وہ پیسہ کشکول میں سے جاتا کہاں ہے یہ سمجھ نہیں آتی۔ میری اور مجھ جیسے جموروں کی تعلیم کے نام پر پیسے لئے جاتے ہیں لیکن اعلی تعلم کے لئے ہم جیسے جموروں کو قرض لینا پڑتا ہے زر اور زمین بیچنا پڑتی ہے۔ اور پھر امید کی جاتی ہے کہ تعلیم کے بعد جمورے کے گلے پڑی رسی کھل جاوے گی۔
لیکن رسی کھلتی نہیں تبدیل ضرور ہو جاتی ہے۔ جمورے اور مداری کے درمیان اتنا لمبا فاصلہ ہے کہ جمورا چاہ کر بھی پوری جان لگا کر بھی اس مقام تک نہیں پہنچ پاتا اور جب پہنچ جاتا ہے تو معلوم ہوتا ہے کہ اب اس پر ایک اس سے بھی بڑا مداری براجمان ہوا چاہتا ہے اور اب اس کا جمورا بن کے تماشا دکھانا ہوگا۔ تماشہ کا طرز مختلف ہوجاتا ہے لیکن کشکول پھر آخر میں خالی ہو جاتا ہے۔۔۔
سارا قصور اس رساؤ کا ہے جو رقم کو کشکول سے بہا لے جاتی ہے، جب تک وہ نہ رکی جمورا جمورا ہی رہے گا پیروں میں جوتا نہ ہوگا اور تعلیم کچھ نہ کچھ بیچ کر ہی حاصل کرنا پڑے گی۔
Advertisements

1 Comment

Filed under سوچ بچار

One response to “کشکول اور اسکا رساؤ

  1. You must have read athe book ” Confessions of an economic hit-man ” , he solves the puzzle “

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s