نئے سال کی شان میں۔

چند دن پہلے نئے سال کی شان میں کچھ شاعری پڑھنے کا موقع ملا ویسے تو مجھے اس نئے سال کے جشن کے خیال سے ہی کوفت ہوتی ہے لیکن اس پر لکھوں گا تو مڈل کلاسی سوچ کا تعنہ ملے گا لہزا مصنف بغیر لکھے ہی “ہن آرام ای” میں ہے۔ جو شاعری اچھی لگی وہ یہاں شامل کر رہا ہوں۔ مشہور ہم مصنف ہیں لیکن لکھنے کے چور ہیں وہ بھی بلا کے سست والے لہذا اپنی اواز میں رکارڈ شدہ ساؤنڈ کلاؤڈ سن کر ثوابِ دارین حاصل کریں اور شعر گوئی کی اس زلت پر ماتم۔ شکریہ۔اگر مصنف کی آواز سننے کے بعد آپ کو کچھ پو جاتا ہے تو ادارہ زمہدار نہ ہوگا اپنی جیب اور موبائل فون کی خود حفاظت کریں۔

قسم سے مصنف اس ریکارڈنگ کے دوران ٹن بالکل نہیں تھا تھکا ہوا اور نیند میں ضرور تھا۔

اے نئے سال تیرا جشن منائیں کیسے – شبیر نازش

  اب کے سال کچھ ایسا کرنا – اختر ملک

سال کی آخری نظم – اعتبار ساجد

 پرانے سال نئے سال میں گزارتا ہوں – ناصر علی

نئے سال پرانے خواب – پروین شاکر 

نیا سال – فیض احمد فیض

 نئے سال کی شام وہ واحد موقع ہوتا ہے جن مجھے ٖیض صاحب کی کوئی نظم منہ متھے لگتی معلوم ہوتی ہے ورنہ یار لوگ جانتے ہیں کہ مصنف نے اکثر اس بات پر پھینٹی کھائی ہے کہ مصنف کو فیض ہمیشہ اوور ریٹڈ شاعر صاحب ہی لگا۔
Advertisements

2 Comments

Filed under ادھار کی شاعری, ادبی ٹوٹے

2 responses to “نئے سال کی شان میں۔

  1. استاد جی فیض صیب پر ہتھ ہولا رکھیں 🙂

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s