سادگی کا خوشیوں سے تعلق

ناصر بیٹے کوئی لفظ اچھا یا برا نہیں ہوتا۔ کسی چیز کا اچھا یا برا ہونا ایک ریلیٹو چیز ہے۔اب دیکھو نا ہمارے ملک میں دو طبقے آباد ہیں، ایک طبقہ اس ملک کی آبادی کا پچانوے فیصد ہے جس میں راجا زیرک خان، بودی پہلوان، ماسی برکتے، اور چاچاخدا بخش جیسے سادہ لوگوں کے علاوہ وہ تمام مڈل کلاس شامل ہے جن کے رویئوں، سوچوں اور عقیدوں کا تعلق اس ملک کے بنیادی نظریئے سے ہے۔

اس ملک میں ایک چھوٹا سا ملک اور بھی ہے جسکی آبادی پانچ فیصد ہے۔ یہ جمی، ٹونی، روزی، اور ٹیٹو پر مشتمل ہے۔ ان کی کرسیاں اور دولت کمانے کی مشینیں تو پاکستان میں ہیں مگر انکا بینک بیلنس، ویلاز، دل اور دماغ امریکہ اور یورپ میں ہیں۔ انکی اپنی ویلیؤز ہیں اور ہماری اپنی ویلیؤز ہیں۔  ہم میں سے جو انکی کلاس میں شامل ھونے کی کوشش کرتا ہے تو اسے ان کی ویلیؤز کے ساتھ کومپرومائز کرنا پڑتا ہے جو ہم نہیں کر پاتے۔ یہ وہ سفید فارم ہیں جو جنوبی افریقہ کے خزانوں پر قابض ہیں۔ مگر ان خزانوں کے وارث ہم سیاہ فارموں کو حقارت کی نظر سے دیکھتے ہیں۔ ہماری اور انکی کبھی دوستی نہیں ہو سکتی۔

پرانی بستیاں بھی اب سکون سے خالی ہوتی جا رہی ہیں بیٹے۔ انکی زندگیوں میں خوشیاں انکی سادہ زندگی کی وجہ سے تھی۔ مگر چند نودولتیوں نے اپنی دولت کی گھٹیا نمائش سے ان کی سادہ زندگیوں میں زہر گھول دیا ہے وہ جو رزق حلال کو بہترین رزق سمجھتے ہیں۔

وہ بستیاں آج بھی امن و سلامتی کا گہوارہ ہیں اس لئے کہ وہ صدیوں سے  ایک دوسرے کے ساتھ رہ رہے ہیں انکی آنکھوں میں ایک دوسرے کے لیے لحاظ ہے، وہ ایک دوسرے کی خوشیوں اور غموں میں شریک ہوے ہیں۔  انکا اپنا ایک کلچر ہے، وہ خلاء میں معلق نہیں رہتے۔ انکا اپنی زمین کے ساتھ ایک رشتہ ہے اور وہ اپنی زمین سے وابستہ ہیں۔ اب بیٹے فیصلہ تو آپ نے کرنا ہے کہ ہمیں کیا کرنا چاہیئے۔

Advertisements

Leave a comment

Filed under Feelings, Lahoriaat, Pakistan, Thoughts

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s